ایل جی کا حیرت انگیز اسمارٹ فون جی فائیو

عثمان علی قریشی 20 / 04 / 2016

گزشتہ سال ایل جی نے اپنا ماڈل جی 4لانچ کیا تھا، تاہم وہ کوئی خاطرخواہ پذیرائی حاصل نہ کر سکا مگر اب کمپنی نے ایل جی 5لانچ کر دیا ہے، جس کی کچھ منفرد خصوصیات اسے مقبول بنانے کے لیے کافی ہیں۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق جی 5کی خم دار(Curving) باڈی دیکھنے میں انتہائی خوشنما لگتی ہے اور اس میں فنگر سکینر کی سہولت کے باعث صارفین اپنے انگوٹھے کے ساتھ فون کو لاک اور ان لاک کر سکتے ہیں۔اس کا سینسر(Sensor) انتہائی تیز رفتار ہے۔

اس کی سکرین 5.3انچ چوڑی ہے اور اس کا خم دار کیو ایچ ڈی کوانٹم ڈسپلے (QHD Quantum Display) انتہائی دلکش ہے۔ عموماً سمارٹ فونز میں فرنٹ اور بیک دو کیمرے ہوتے ہیں مگر جی 5میں تین کیمرے لگائے گئے ہیں۔ فرنٹ اور بیک کیمروں کے ساتھ ساتھ اس میں بڑی تصاویر بنانے کے لیے وائیڈ اینگل(Wide Angle) کیمرہ بھی لگایا گیا ہے اور یہ جی 5کا انتہائی منفرد فیچر ہے۔اس وائیڈ اینگل کیمرے کے ذریعے ”فل الٹرا ایچ ڈی 4کے کوالٹی“ (Full Ultra HD 4K quality) کی ویڈیو بھی بنائی جا سکتی ہیں۔

اس کے فرنٹ کیمرے میں ایک بیوٹی موڈ بھی شامل کیا گیا ہے جس کے ذریعے آپ بہترین سیلفی لے سکتے ہیں۔رپورٹ کے مطابق جی 5میں جدید ترین کوالکوم 820(Qualcomm 820) پروسیسر نصب کیا گیا ہے اور یہ 32جی بی میموری کا حامل ہے۔

ایل جی 5 کی سب سے منفرد خوبی یہ ہے کہ اس میں کچھ ایسے حصوں کو بھی تبدیل کیا جا سکتا ہے کہ جو دیگر موبائل فونز میں مستقل طور پر نصب ہوتے ہیں۔ مثال کے طور پر ایک بٹن دبانے سے نچل حصہ کھل کر علیحدہ ہو جاتا ہے، جس کے بعد نہ صرف بیٹری بدلی جا سکتی ہے، بلکہ کیمرہ اور ساﺅنڈ پیک بھی بدلا جا جا سکتا ہے۔ اس کی میموری میں 2ٹی بی تک اضافہ بھی کیا جا سکتا ہے۔امید کی جا رہی ہے کہ ایل جی کا یہ ماڈل سام سنگ و دیگر حریف کمپنیوں کو سخت چیلنج دے گا۔